لاہور: وکلاء کو ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کا منصوبہ

لاہور: پنجاب ریونیو اتھارٹی (پی آر اے) نے زیادہ ٹیکس اکٹھا کرنے کے لیے منصوبہ بندی شروع کردی ہے جس کے تحت وکلاء کو ٹیکس نیٹ میں شامل کرنے کا منصوبہ بنالیا گیا۔ پنجاب ریونیو اتھارٹی نے چھ ماہ کے دوران 72 ارب روپے ریونیو حاصل کر لیا، سیلز ٹیکس ان سروسز 5 فی صد ہی رہے گا۔ پنجاب ریونیو اتھارٹی (پی آر اے) نے بتایا کہ ٹیکس دہندگان کی تعداد ایک لاکھ سے تجاوز کر گئی، 155 ارب کا سالانہ ہدف حاصل کر لیں گے۔ زین العابدین ساہی نے کہا کہ تنازعات کے فیصلے عدالت سے باہر کرنا اولین ترجیح ہے، ایف بی آر  سے 16 ارب روپے فروری تک مل جائیں گے۔ چیئرمین پی آر اے نے کہا کہ سیلز ٹیکس کی وصولی میں 22 فی صد سالانہ گروتھ ہو رہی ہے، وکلا کو ٹیکس نیٹ میں لا رہے ہیں، تعلیم، صحت اور انصاف کے شعبوں پر ٹیکس عائد کرنے سے عوام پر بوجھ پڑے گا۔ انکا کہنا تھا کہ ریسٹورنٹس ٹیکس وصولی کو سسٹم میں لانے کے لئے عوام کا تعاون ضروری ہے، اس سال مری اور گجرات میں دفتر کھولیں گے۔ چیئرمین پی آر اے کا مزید کہنا تھا کہ ملتان میں گزشتہ سال 54 فی صد گروتھ کی، گوگل، نیٹ فلیکس سمیت دیگر سروسز فراہم کرنے والوں کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لئے طریقہ کار بنا رہے ہیں۔