جماعت اسلامی ملک میں شریعت کا نظام چاہتی ہے ، سراج الحق

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی ملک میں شریعت کا نظام چاہتی ہے۔ تفصیلات کے مطابق امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے مزدور کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر آپ بے روزگار ہیں اور انصاف نہیں ملتا تو وجہ یہ ظالم حکمران ہیں ، ہم آپ کو بلاتے ہیں ان ظالموں کے بجائے رحمت اللعالمین ﷺ کے دامن میں پناہ لے لیں۔ انہوں نے کہا کہ جہاں جاگیریں کاشت ہوتی ہیں اس میں کاشتکاروں کو بھی شریک کیا جائے ، 74 سالوں میں ظالم حکمران نے ملک کو دو حصوں میں تقسیم کیا ، آپ کو بھی حق نہیں دیا ، میرا ایجنڈا یہ ہے کہ کارخانے کے منافع میں مزدور کو بھی شریک کیا جائے ، شرم کی بات ہے کارخانے کا مالک کروڑوں کماتا ہے اور ادھر کام کرنے والا بھوکا سوتا ہے۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ نظام مصطفیٰ اور نظام شریعت میں محمود وایاز ایک صف میں نظر آتے ہیں ، جب مافیا کا ایجنٹ قومی اسمبلی میں موجود ہو  تو کون ان کا احتساب کرے گا ،  اسمبلی میں کوئی آپ کا نمائندہ نہیں ہے۔ سراج الحق نے کہا ہے کہ سرمایہ دار کو آپ ووٹ دیتے ہیں تو وہ وہاں جا کر اپنے مفادات کا تحفظ کرتا ہے ، یہ کیسا ظلم ہے کہ شاہ محمود قریشی اور گوجرانوالہ کا مزدور ایک جیسا ٹیکس دیتا ہے ، یہاں ریاست اور حکومت ملکر غریب آدمی کا خون تو نچوڑتی ہے لیکن اسے حقوق نہیں دیتی۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ آپ نے ان سانپوں کے منہ میں دودھ ڈال کر ازدھا بنایا ہے ،  انہیں قومی اسمبلی میں پہنچایا ہے ، ان سانپوں کو  اسمبلی سے نکالنا ہے۔