بڑھتے ہوئے پیٹ اور موٹاپے کی وجوہات

یہ حقیقت ہے کہ موٹاپا بدترین چیزوں میں سے ایک ہے اور ہر موٹاپے کا شکار انسان اس سے جلد از جلد نجات حاصل کرنا چاہتا ہے۔

پیٹ کی اضافی چربی نہ صرف بری لگتی ہے بلکہ کئی خطرناک بیماریوں کو بھی دعوت دیتا ہے۔

لیکن یہاں سوال یہ ہے کہ آخر انسان اچانک موٹاپے کا شکار کیسے ہوجاتا ہے، چند اہم وجوہات بتئی گئی ہیں۔

1۔ نیند پوری نہ ہونا:

موٹاپے کی ایک بڑی وجہ نیند پوری نہ ہونا بھی ہوسکتا ہے کیونکہ انسان  کے جسم کو بھرپور نیند کی ضرورت ہوتی ہے اور وہ وقت پر جسم کو نہیں ملتی ہے جس کے نتیجے میں وزن بڑھنا یا پیٹ بڑھنا شروع ہوجاتا ہے۔

2۔ میٹھے کا زیادہ استعمال :

زیادہ میٹھی غذائیں اور مشروبات یہاں تک کہ چینی اور کافی میں چینی کی زیادہ مقدار کا استعمال بھی توند کی چربی میں اضافے کا باعث بنتا ہے۔

فروٹ جوس درحقیقت ایک روپ بدلا ہوا میٹھا مشروب ہے، درحقیقت بغیر چینی والے سوفیصد خالص فروٹ جوس میں بھی بہت زیادہ مٹھاس ہوتی ہے۔

3۔ تناؤ:

جو انسان ذہنی طور پر پریشان ہوتا ہے اور مستقل الجھنوں کا شکار رہتا ہے سائنسی اعتبار سے ان لوگوں میں بھی وزن بڑھنے کے بہت زیادہ چانسز ہوتے ہیں۔

4۔ فائبر کے استعمال میں کمی:

فائبر اچھی صحت اور جسمانی وزن کو کنٹرول کرنے کے لیے بہت اہم غذائی جز ہے۔

فائبر پیٹ بھرے رکھنے کا احساس، بھوک کے ہارمونز کو مستحکم اور غذا کی شکل میں کم کیلوریز جذب کرنے میں مدد دیتی ہے اور اسکے ساتھ ساتھ فائبر توند کی چربی گھٹانے میں مدد دیتی ہے۔