سندھ کوپانی کی شدیدقلت کا سامنا

سندھ کوپانی کی شدیدقلت کا سامنا ہے جس کی وجہ سے کوٹری بیراج پر پانی کی آمد پچھلے سال کے مقابلے میں 50 فیصد کم ہوگئی۔ کوٹری بیراج کی اپ اسکیم سے 10 ہزار 916 کیوسک پانی گزر رہا ہے اور ڈاؤن اسٹریم میں دھول اڑنے لگی ہے جب کہ پانی کی کمی کے باعث چاول اور کپاس کی کاشت خطرے میں پڑ گئی۔ پیپلز پارٹی نے تونسہ پنجند لنک کینال کھولنے کی مخالفت کی ہے۔ دوسری جانب وزیراعظم نے پانی کی کمی کے معاملے پرآج پھراجلاس بلالیا اور صوبہ سندھ کی شکایات پر ارسا حکام کو بھی طلب کیا گیا ہے جب کہ اجلاس میں سندھ اور پنجاب کے حکام شریک ہوں گے، اجلاس میں پانی کی کمی اور صوبوں کی شکایات کا جائزہ لیا جائے گا۔ سہیل انور سیال نے دعویٰ کیا تھا کہ صرف سندھ کے ساتھ پانی کے معاملے پر زیادتی ہورہی ہے، تین صوبوں کی مخالفت کے باوجود ارسا نے ٹی پی کینال کا نوٹیفیکشن جاری کیا۔