پاک فوج دنیا کی ٹاپ ٹین طاقتور افواج میں شامل

فوجی لحاظ سے طاقتور ممالک کی گلوبل فائر پاور کی سال دو ہزار اکیس کی رینکنگ میں پاک فوج نے پانچ ممالک کو پیچھے چھوڑتے ہوئے پانچ درجہ ترقی کی ہےاور پندرویں سے دسویں نمبر پر آ گئی ہے۔ رینکنگ کی بنیاد پچاس سے زائد فیکٹرز کو مد نظر رکھ کر کی جاتی ہے، ان میں ملٹری حجم سے لے کر ملک کی فنانشل پوزیشن، جغرافیائی اہمیت جیسے عوامل شامل ہیں۔

فوجی لحاظ سے طاقتور ممالک میں امریکہ پہلے، روس دوسرے اور چین تیسرے نمبر پر ہے، رینکنگ میں بھارت بدستور چوتھے اور جاپان پانچویں نمبر پر ہے۔

یہاں یہ امر نہایت قابل ذکر ہے کہ دنیا کی پہلی پندرہ فوجی طاقتوں میں پاکستان کے علاوہ کسی کی رینکنگ میں بہتری نہیں آئی۔ گزشتہ سالوں میں صرف پاکستان نے ہی بطور فوجی طاقت ترقی کی ہے جس کا سو فیصد کریڈٹ پاک فوج اور سپہ سالار جنرل قمر جاوید باجوہ کو جاتا ہے۔

نئی رینکنگ میں پاکستان نے ایران، انڈونیشیا، اسرائیل اور کینیڈا کو پیچھے چھوڑ دیا ہے۔جس کے بعد اب ترکی، اٹلی، مصر، ایران، جرمنی، انڈونیشیا، سعودی عرب، سپین، آسٹریلیا، اسرائیل اور کینیڈا جیسی فوجی طاقتیں پاکستان سے پیچھے ہیں۔

سال دو ہزار اکیس کی رینکنگ میں جن ممالک کی فوجی طاقت کمزور ہوئی ہے ان میں مصر، جرمنی، اسرائیل، شمالی کوریا، جنوبی افریقہ، میانمار، کولمبیا، رومانیہ، میکسیکو، پیرو، ڈنمارک، عراق، شام، انگولا، بلغاریہ شامل ہیں۔